جوڑ ں کا درد اور سوج 0

گھٹنے کا درد

چالیس سال کے بعد گھٹنے کی تکلیف کو اکثر عمر کا تقاضا قرار دے کر پین کلر کی لال بتی کے پیچھے لگا کر ایک سال بعد گھٹنے تبدیل کرانے کا مشورہ دے دیا جاتا ہے۔

مجھے ھومیو پیتھی کے اصول و ضوابط تو زیادہ نہی معلوم لیکن اپنی پریکٹس میں بے شمار مریضوں کا علاج کیا کچھ مکمل درست اور باقی کو تکلیف میں بہت حد تک افاقہ آگیا۔

میں تو علاج اس طرح کرتا ھو پہلے سفلینیمcmکی ایک خوراک دیتا ھوں دو دن کا وقفہ کرتا ھوں کلکیریا فاس اور کلکیریا فلور 6x کی 3+3گولیاں دن میں 3بار لمبہ عرصہ کھاتا ھوں صبح آرنیکا 200 دوپہر رسٹاکس 200 رات کو روٹا 200دیتا ھوں کچھ مریضوں کو جوڑوں میں خشکی ھوتا کالچیکم 200 ۔برائیونیا 200اور بربرس ویلگرس 200 بھی دیتا ھوں جن کو دل کے مریض کے بعد مسلہ بنا ھو ان کو کالمیا 30 بھی دے دیتا ھوں۔ کبھی کبھی گوائیکم 30 بھی استعمال کرتا ھوں۔

اگر کسی کا یورک ایسڈ کا مسلہ ھو تو ارٹیکاQ اور نیٹرم فاس6x دیتا ھوں

اور بیرونی طور پر جو پین کلر لوشن گروپ میں بتاچکا ھوں لگانے کو دیتا ھوں۔ پھر 3 ماہ تک ہر ماہ سفلینیم کی دھرائی کرتا ھوں۔پانی زیادہ پینے اور گھٹنے پر ہاتھ رکھ کر 11بار درد پاک پڑھ کر گھٹنے پر دم کرنے کے تجویز دیتا ھوں۔

اکثر مریضوں کو گھٹنے کے ساتھ ساتھ باقی جوڑوں کی تکلیف بھی ختم ھو جاتی ہیں۔

باقی دوست بھی اپنے تجربات کمنٹ میں لکھیں۔

ھومیو ڈاکٹر عابد راو۔ایڈمن فاسٹ گروپ

اپنا تبصرہ بھیجیں