0

جوڑوں کو چکنا بنانے والی جھلی کی سوزش

جوڑوں کو چکنا بنانے والی جھلی کی سوزش گھٹنوں کی دردیں اور ہومیو پیتھی

ترتیب و پیش کش: خالد محمود اعوان


جوڑوں کو چکنا بنانے والی جھلی کی سوزش
٭- ”ایپس میلی فیکا“
گھٹنوں کے جوڑوں کو چکنا بنانے والی جھلی میں حاد سوزش پائی جاتی ہے۔سوجن میں سفیدی ، ہاتھوں اور پیروں میں استسقاء، اور سُن پن۔ہتھیلیاں گرم ہوتی ہیں، ٹانگیں اور پیرویکسی ،پیلے اور سوجے ہوئے ۔ بوٹ اُتارتے وقت پاوں¿ سوجے ہوئے ، بھاری ، سخت اور بے لچک ہوتے ہیں ۔انگوٹھوں میںسرخی کے ساتھ جلن ، پاون کے نیچے درمیان میں درد ں ٹھنڈے ۔ پاون کے نیچے درمیان میں درد اور انگوٹھوں میں حساسیت بڑھی ہوئی ۔ نیچے کے اعضاءمیں سن پن ۔ روماٹزم ، گاوٹٹ، گاوٹ¿ٹی ناڈز پائے جاتے ہیں۔ جوڑوں کی تکالیف گرمی سے بڑھتی ہیں اور ٹھنڈک سے بہتر ہوتی ہیں ۔ پھل پھلی ورمیں ، چکنا بنانے والی جھلی کی سوزش سے جوڑوںمیں ڈنگ لگنے والی شدید دردیں ۔ ہلکی سی حرکت بھی دردوں میں اضافہ خاص طور پر گھٹنوں کی جوڑوں میں ہوتا ہے ۔سیال مواد کا نالیوں میں سے نکل کرجوڑوں میں چلے جانا،جسے سفید سوجن کہا جاتا ہے ۔ سکریفولس حالتوں سے کافی مشابہ ہوتے ہیں۔جوڑوں کے ارد گرد کی جلد گلابی ، ہلکی سرخ رنگ کی ہوتی ہے۔درد میں بہتری ٹھنڈک پہنچانے سے آتی ہے۔ گرمی سے تکلیف میں اضافہ ہوتا ہے۔جوڑ سخت ،جن کو دبانے سے درد ہوتا ہے۔ جوڑوں کے ارد گردٹشوزمتاثر ہوتے ہیںان میںسوجن اور اڈیما ۔ایپس عام طور پر جوڑوں پر اثر انداز نہیں ہوتی بلکہ جوڑوں کے ارد گرد ٹشوز ،بندھنوں ،پٹھوں پراور لعاب پر کام کرتی ہے ۔اس کی دردیں ڈنگ لگنے والی، جلن دار ہوتی ہیں اوران میں سوجن پائی جاتی ہے۔مریض گرمی برداشت نہیں کرتا ۔ جلد اور میوکس ممبران میں سوجن ۔ پیاس نہیں ہوتی۔گلے میں سوجن ، ٹھنڈ پہنچانے سے جِلد سکون محسوس کرتی ہے ۔ کیڑوں کے کاٹنے کے بعد سوجن ۔پیشاب کرتے وقت آخری قطرے میں جلن اور دردہوتی ہے۔ گردوں کی سوزش۔حیض آنے سے پہلے والی علامات کے ساتھ پانی کا رکنا،جوڑوں کی دردیں ساتھ ڈنگ لگنے والی ،جلن دار دردیں اور سوجن پائی جاتی ہے=”ایپس میلی فیکا“
٭-”برائی اونیا“
گھٹنوں کے جوڑوں میں رطوبت پیدا کرنے والی جھلی کی سوزش ۔ جوڑ پیلے ، سرخ ، اوران میں کھچاوں¿ پایا جاتا ہے ۔اس کا مریض جذباتی طور پر ، جسمانی طور پر، اور دماغی طور پر خشک ہوتا ہے۔تنہا رہنا چاہتا ہے کہ کوئی اسے ڈسٹرب نہ کرے ۔ اسے اس خشکی کو دور کرنے کے لئے مسلسل زیادہ مقدار میں پانی چاہیے۔اس لئے وہ زیادہ مقدار میں پانی پیتا ہے ۔اس کی دردوں میں اضافہ ہلکی سی حرکت سے ہوتا ہے۔جوڑوں میں سختی ، حاد روماٹزم ،جوڑوں میں چمکدارسوجن میںگرمی اور گرم کپڑوں میں لپیٹنے سے بہتری آتی ہے۔جوڑوں میں درد ٹھنڈ لگنے سے یا زخمی ہونے سے آتا ہے ۔ گھٹنوں کی پرانی دردوں کی ایک مفید دوا ہے جب اس میں اضافہ چلنے سے ہو۔مریض بہتری محسوس کرتا ہے جب وہ مکمل طور پرآرام کرے۔درد کے ساتھ سختی اور گھٹنوں میں سوجن پائی جاتی ہے۔جوڑسرخ،گرم اور سوجے ہوئے ہوتے ہیں ۔ ایسے مریض جو درد میں مبتلا ہوںاور سیڑھیاں چڑھتے وقت درد میں بہتری آئے اس وقت برائی اونیا بہت مفید ہے ۔ چلتے وقت جوڑوں میں کریکنگ کی آوازیں آتی ہیں= ”برائی اونیا“
٭-”کلکیریا کارب“
گھٹنوں کی دردوں میں اگردردیںپرانی ہوں۔اس کے مریضوں کی تونداکثر بڑھی ہوئی،چربی چڑھی ہوئی اور پھولے ہوئے ہوتے ہیںکی ایک مفید دوا ہے ۔ایسے مریض جن کو یہ دوا تجویز کی جاتی ہے وہ شکایت کرتے ہیں ان کے گھٹنوں میںدرد اور سوجن پائی جاتی ہے ۔ دردیں بیٹھنے سے اُٹھتے وقت اورچلنے کے وقت ہوتی ہےں۔گھٹنوں کے جوڑوں میں دردیں جب ان کی تکلیف میں اضافہ پانی میں کام کرنے سے ہوں جیسے دھوبی۔گھٹنے کافی دیر تک ٹھنڈے پانی میں رہیں ساتھ دردیں پائی جائیں=”کلکیریا کارب“ 30 دوا ہے۔
٭-”کاسٹی کم“
گھٹنوں کی دردوں کی دواوں¿ں میں سے ایک مو ¿ثر دوا ہے۔ گھٹنوں کی دردووں میں جس کے ساتھ جوڑ میں سختی اور کریکنگ کی آوازیں آتی ہیں۔ان دردوںمیں بہتری گرمی پہنچانے سے آتی ہے اور اضافہ ٹھنڈی ہوا لگنے سے آتی ہے=کاسٹی کم30 دوا ہے۔
٭-کلکیریا فلور
جوڑوں کی دردوں میں ایک مفید دوا ہے جب اس کی تکالیف مزمن ہوں۔دردوں میں بہتری حرکت اور گرمی سے آتی ہو۔جوڑ بڑھے ہوئے اور سخت اوران میں گانٹھیں پڑ جائیںیا ہڈیوں میں نوکیں نکل آئیں=کلکیریا فلور30 دوا ہے۔
٭-”آئیوڈیم“
جوڑوں کی سوزش کے ساتھ جوڑ بدوضع، سوزاکی گٹھیا ،گردن کے پچھلے حصہ اور بازووں¿ کا گٹھیا۔گٹھیاوی دردیں ،جوڑوں کی دردیں، سکڑاو¿ کا احساس ۔رات کو ہڈیوں میں درد ہوتا ہے ۔ایسے بچے جو سکریفولس (بلغمی مزاج) کے ہوں جن کے گھٹنوں کے جوڑوں میں استسقاءپایا جائے ایپس کے بعد بہترین کام کرتی ہے ۔آئیوڈین کا مریض دماغی طور پر بے چین،بڑھی ہوئی انزائٹی ،جو ہر وقت ذہن پرچھائی ہوئی ہو۔اس کا مریض بہت مصروف لیکن اس کی مصروفیت بے ترتیب ہوتی ہے۔اچھی بھوک کے باوجود نقاہت ،بالوں کا گرنا،جلد خشک،کمزور مسلز،چہرہ پھولا ہوااور تھائی رائیڈ گلینڈز سوجے ہوئے۔گلہڑ جس میں نگلنے میں دقت ہو۔دماغی طور پر سست ، وزن بڑھنے کا رجحان ، غنودگی یا تھکاوٹ پائی جاتی ہے ۔ جوڑوں میں سوزش اور دردسے بھرے ہوئے۔ہڈیوں میں دردیں رات کو،آواز کھردری۔میٹابولک کی خرابیاںہائیپوتھائیرازم اور ہائپرتھائیرازم ۔تکالیف میں اضافہ خاموشی کے وقت ،گرم کمرے میں ، دائیں طرف ہوتا ہے ۔ کھلی ہوا میں چلنے سے بہتری آتی ہے = آئیوڈین
٭-”کالی کارب“
جوڑوں کی دردوں کی ایک موثر¿دوا ہے۔گھٹنوں کی دردیں کولہے سے گھٹنے کی طرف جاتی ہیں۔ دبانے سے تکلیف بڑھتی ہے۔حرکت سے اور گرمی پہنچانے سے بہتری آتی ہے۔گھٹنے میں درد کے ساتھ کمر درد پائی جاتی ہے ۔ درد تیز اور کاٹنے والی ہوتی ہیں=”کالی کارب“
٭-”لیڈم“
جوڑوں کو چکنا بنانے والی جھلی کی سوزش جو کسی چوٹ کے نتیجے میں آئے۔یہ دوا گٹھیا کے مریضوں کی ایک مفید دوا ہے۔ اس کا گٹھیا پیروں سے شروع ہوتا ہے اور اوپر کی طرف چلتا ہے۔اس کے درد ٹھنڈے پانی میں رکھنے سے بہتر ہوتے ہیں۔ جوڑ گرم ،سوجے ہوئے اور تکلیف کی وجہ سے پیلے پڑ جائیں۔دائیں کندھے میں دھمکن،کندھوں میں دباو¿ جس میں اضافہ حرکت سے ہوتا ہے۔جوڑوں میں کڑک، تکلیف میں اضافہ بستر کی گرمی سے ہوتا ہے۔=لیڈم
٭-” مرکیوری ایس“
جوڑوں کو چکنابنانے والی جھلی کی سوزش۔ جوڑوں میں زوال آنے کا رجحان ۔جوڑوں میں چیرنے پھاڑنے کی طرح کی دردیں۔ شدت رات کوہوتی ہے ،مریض سردی برداشت نہیں کرتا ، پسینہ کثرت سے آتا ہے۔پسینہ تیل جیسا چکنا،لیسدارہوتا ہے ۔رات کو ٹانگیں سرد ۔ پیروں اورٹانگوں پر استسقائی سوجن ۔مرض میں شدت رات کو ، مرطوب موسم میں،دائیں کروٹ لیٹنے سے ،پسینہ آنے سے،گرم کمرہ میں اور بستر کی حرارت سے ہوتا ہے۔اس کا مریض زندگی سے بیزار ہوتا ہے ۔ سمجھتا ہے کہ میری معقولیت جواب دے چکی ہے۔خود اعتمادی کی کمی ، سوالوں کا جواب سستی سے دیتا ہے جیسے حافظہ کمزور ہو=” مرکیوری ایس“
٭-”رسٹاکس“
جوڑوں کو چکنا بنانے والی جھلی کی سوزش کی دوائیوں میں سے ایک بہترین دوا ہے۔جوڑوں میں اور مسلز میں دردیں ہوتی ہیں ۔ علامات میں اضافہ بیٹھتے وقت،بیٹھے ہوئے ہونے کی حالت سے اُٹھتے وقت،اور حرکت کو شروع کرتے وقت ہوتا ہے۔مسلسل حرکت سے بے چینی میں بہتری آتی ہے۔مریض بے چین اور اکثردرد کی وجہ سے قدم ڈگمگاتے ہیں،خاص طور پررات کو۔گرمی سے درد میںکمی آتی ہے ۔ تکلیف میں اضافہ ٹھنڈ میں، نمدار موسم میں اور طوفان میں بھی ہوتا ہے۔جوڑوں کے ارد گرد ریشہ دار ٹشوزاور مسلز کے غلاف کی تکلیف میں بہتری اورجوڑوں میں سرخی اور سوجے ہوئے ہوتے ہیں ۔ ”آرتھرائٹس “ میںجوڑ گرم اور پُردرد،گٹھیاوی دردیں ، چیرنے پھاڑنے والی دردیں جیسے عضو ماوف¿ دو پتھروں کے درمیان پس رہا ہے۔ باریک ریشوں ، جوڑوں ، بندھنوں ،پردوں وغیرہ پر گہرا اثرہوتا ہے۔ کمر میں گٹھیاوی دردیں گردن کی گدی کی سطح سے کمر کے نیچے حصے تک پھیلتی ہیں۔ جن میں بہتری حرکت سے آتی ہے۔جلد پر،بلغمی جھلیوں کی خرابیوں میں امراض گٹھیا میں اور ٹائیفائیڈ قسم کے بخاروں میں زیادہ تر ظاہر ہوتی ہے= رسٹاکس
٭-روٹا گریوی لینس
گھٹنوں کے جوڑوں کی مزمن دردوں میں روٹا ایک بہت ہی مفید دوا ہے۔اس کی علامات جس سے یہ پہچانی جاتی ہے۔اس میںگھٹنوں کو موڑنے سے یا گھٹنوں کو جھکانے سے جیسے سجدہ کرتے وقت ہوتا ہے درد پائی جاتی ہے۔ سیڑھیاں اترتے وقت درد ہوتاہے۔ بہتری اس وقت آتی ہے جب متاثرہ گھٹنے کو دبانے سے آئے یا حد سے زیادہ لھینچنے سے یا حد سے زیادہ پھیلانے سے آئے تو اس کی دوا =روٹا گریوی لینس 30
٭-”سلفر“
جوڑوں کو چکنا بنانے والی جھلی کی سوزش میں خاص طور پرجب اس میںسے اخراجات شروع ہو چکے ہوں ،ان اخراجات کو جذب کرنے میں تیزی سے کام کرتی ہے ۔رات کو تلووں¿ اور ہتھیلیوں میں جلن ہوتی ہے ۔بغلوں میں پسینہ ،اس میں لہسن جیسی بوآتی ہے ۔ بازووں¿ں اور کندھوں میں چیرنے پھاڑنے کی طرح کے درد یا کھچاو¿ پایا جاتا ہے۔گھٹنوں اور ٹخنوں میں سختی ، مریض سیدھا ہو کر نہیں چل سکتا۔سلفر کے مریض کے کندھے جھکے ہوئے ۔ ذہنی طور پر اس کا مریض خود غرض ،دوسروں کی مناسب طور پر عزت نہیں کرتا۔بد مزاج اور سست الوجود ہوتا ہے ۔ ”سلفر“ اس وقت مفید ہے جب گھٹنے متاثر ہوں۔اس کا نمبر ایپس میلی فیکا اور برائی اونیا کے بعد آتا ہے۔جلدغیر صحت مند ، جلدی بیماریوں کا رجحان ۔ ریشز،ایگزیما اور جلدی بیماریاں جن میںناقابل برداشت جلن اور خارش ہوتی ہے۔سن یاس میں گرمی کے کوندے آئیں ۔ بار بار ہونے والی گوہانجنیاں ۔ خونی بواسیر ، بولکھڑ ، آنکھوں میں سرخی اور جلن ۔تلووں¿ اور ہتھلیوں میں جلن شدید تیزابیت ، پسینہ مشکل سے آتا ہے ۔ نہانے سے نفرت ، تکالیف میں اضافہ رات کو،بستر کی گرمی سے گرم شاور لینے سے یا گرم پانی سے نہانے سے ہوتا ہے۔ اعصابی خرابیوں میں دوسری دوائیوں کے ساتھ ایک مفید دوا ہے۔سلفر جسم میں پایا جانے والاایک منرل ہے۔ جلد دیکھنے میں ارغوانی مائل ،خارش کھرچنے سے بڑھتی ہے۔میوکس ممبران سرخ ہوتی ہیں ۔ شدید پیاس، کھانسی اور اسہال میں اضافہ صبح کے وقت ہوتاہے۔ گھٹنے کے جوڑوں کے امراض میں ”سلفر“بہت ہی مدد گار دوا ہے۔گھٹنے کی درد میں اضافہ سیڑھیاں چڑھتے وقت ہوتا ہے۔کھڑے ہونے کی حالت میں ،ساتھ سختی پائی جاتی ہے۔اس کا مریض سیدھا ہو کر نہیں چل سکتا۔ایسے مریض جو اس بات کی شکایت کریں کہ ان کے پاوں¿ میں گرمی ہے اور ساتھ گھٹنوں میں دردپائی جائے تو =سلفر200 استعمال کریں۔

جوڑوں کا درد اور چکناہٹ کا کم ہونا

جسم میں دردوں ،پٹھوں میں دردیں میں استعمال ہونے والے نسخے
33-ماہواری بند ،جوڑوں میں درد
Pulsatilla 1M
209-کمر درد
Cimicifuga + Kali Carb +Mag. Phos. 30
ملا کر یا پھر یہ نسخہ
210-کمر درد
Arnica + Aconite 200
211-کمر دردیا یہ نسخہ
1- Arnica+Rustox 200
2- Kali carb 30
212-چوٹ لگ جانا
Arnica + Aconite + Belladona 30
213-قبض اور کمر درد
Sulphur 200 اورBryonia 200
باری باری
214-ریڑھ کی ہڈی میں درداور
نچلے حصے میں درداور چلنا مشکل
Hypericum + Ruta + Staphisagria 30 ملا کر
215-ریڑھ کی ہڈی میں درد
Bryonia + Podophyllium + Causticum 200
اگر اس سے فائدہ نہ ہو تو مندرجہ ذیل نسخہ استعمال کریں
216-ریڑھ کی ہڈی میں درد
1- Arnica+Lachesis+Ledum 200
2-Cimicifuga + Kali Carb + Mag. Phos. 30
217-سلپ ڈسک
1- Arnica + Rustox 200
Calc.Floor + Mag.Phos +Nat.Mure 6X
222-ہاتھ کی ہتھیلی اور انگلیوں
کے جوڑوں میں ناطاقتی
1- Bacillinum+Bryonia 200
2- Arnica+Rustox 200
نمبر1صبح اور 2نمبر رات کو
224- پاوں کے نیچے درمیان میں درد
Arnica + Bryonia

  • Belladona 200
    ملا کر یا پھر یہ نسخہ
    225پاوں کے نیچے درمیان میں درد
    1- Anti Monium Crude 30
    2- Calc.floor + Ferm.Phos + Silcea + Kali Mure 6X
    روزانہ صبح ایک بار یا پھر یہ نسخہ
    226-پاوں¿ کے نیچے درمیان میں درد
    Bellis Perenus + Ruta Grav. 30
    227-جوڑوں میں درد
    1- Arnica+Rustox 200
    2- Kali Carb 30
    اگر ایک اور دو نمبر سے آرام نہ آئے تو 3 نمبر ملا کر شروع کر دیں۔
    3- Nat. Mure+Ferm.Phos
    +Mag. Phos+ Kali Mure 6X
    228-جوڑوں میں درد (یا پھر یہ نسخہ)
    1- Arnica+Rustox 200
    2- Calc.floor + Nat.mure
  • Mag.Phos 6X
    229-جوڑوں میں درد (یا پھر یہ نسخہ)
    1- Caulophyllium+Bryonia 200
    2- Arnica + Rustox 200
    ملا کرباری باری ایک نمبر اور دو نمبر
    230-جوڑوں میں درد اور ¿پاوں میں سوجن
    1- Arnica + Caulophyllium+200
    2- Benzoic Acid 30
    231-جسم میں درد کے لئے
    Arnica + Bryonia + Causticum 200
    234-اعصابی تکلیف،سردرد، گردن،بازو میں درد
    1- Arnica+Gelsemium 200
    ہفتہ میں دو بار
    2- Cimicifuga + Kali Carb 30
    239-گھٹنوں میں درد
    1- Arnica + Bryonia 200
    2- Sulphur 30
    نمبر1رات کو ملا کر اور 2نمبر صبح شام
    240-گھٹنوں میں پرانی درد
    1- Arnica 1M
    2 – Bryonia 1M
    باری باری دس دس دن کے وقفہ سے چھ ،سات خوراکیں
    241-گھٹنے میں پانی پڑ گیا ہو
    1- Bryonia 200 + Sulphur 200
    2- Phosphorus 30
    244-کمر کی ہڈی گھس گئی ہواور اٹھانے سے درد
    Bacillinum + Phosphorus 30
    245-ریڑھ کی ہڈی میں پانی
    1 Bacillinum + Psorinum +
    Pyrogenium 200
    2 Kali Phos+silcea+
    Ferm. Phos 6X
    246-درد ریڑھ کی ہڈی سے ٹانگ تک جائے
    1 Arnica+Bryonia 200
    2 Hypericum+ Staphisagaria 30
    ملا کر یا پھر یہ نسخہ
    Oenanthe Crocota 6
    دن میں تین بار
    247-چک کے لئے
    1- Arnica+Rustox 200
    2- Kali Phos + Calc.floor +
    Nat Mure 6X
    25 درد ٹانگ سے پاوں¿ تک جائے
    Lachsis + Ledum plastur 200
    254-دائیں ٹانگ میں درد بادی کی وجہ سے
    1- Lycopodium + Belladona 200
    2- Bryonia + Causticum 200
    باری باری صبح شام استعمال کریں
    255-ٹانگ کے گوشت میں درد
    Arnica + Bryonia + Causticum 200
    256-ٹانگ میں درد اور سوج
    Argentum Nitricum+Carbo Veg. 30
    257-ٹانگ میں نیل اور خون جمتا ہے
    Arnica + Lachsis + Ledum 200
    258 سے کمر کی طرف جاتی ہو
    Hypericum + Cimcifuga + Nux Vomica 30
    259- اور کندھے کے جوڑ ہاتھ،پاوں
    میں سوجن اور ہتھیلیوں پر نیلے داغ
    Arnica + Lachsis + Ledum 200
    260-کلائیوں میں درد
    Kali Carb 30
    261-ٹانگیں گھٹنوں سے لے کر پاوں¿ تک ٹھنڈی
    1 Psorinum 1000
    ہفتہ کے وقفہ سے کل تین خوراک
    2 Conium 30
    262-درد پنڈلی سے کمر کی طرف جاتی ہو
    Hypericum + Cimcifuga + Nux Vomica 30
    263-پرانی چوٹ کے لئے
    1 Arnica 1000
    2 Bryonia 1000
    باری باری
    264-ایڑھیوں کی درد
    Arnica + Sulphur 200
    333-سر اور گردن کے پٹھوں کی کمزوری
    Agaricus 30
    334-پٹھوں کی درد
    Cimcifuga + Kali Carb + Kurchi 30
    335-گردن کے پٹھے کمزور اور درد
    Arnica + Ledum 200
    336-گردن کے پٹھے ،کندھوں کے پٹھے
    ،کنپٹی کی ناڑ کے مسل کھنچے جاتے ہوں
    1 Ciccuta Virosa + Coccus Cacti 30
    ملا کر روزانہ3/4بار اگر افاقہ نہ ہو تو تو پھرنمبر2
    2 Belladona + Cupurum Met.30
    ملا کر دن میں تین بار
    337-گردن کے مسلز کے کھچاو¿ کے لئے
    1 Belladona + Gelsemium 200
    ملا کر دو دن روزانہ ایک بار
    2 Calc.Phos+Kali Phos + Mag.Phos 6X
    625-جوڑوں کی یا اعصابی دردیں
    اگر جسم پُر خون اور گرم ہو تو
    Aconite + Belladona 200
    پہلے دن دو بار پھر چند دن روزانہ ایک بار
    626-جوڑوں کی یا اعصابی دردیں
    اگر جسم کمزور اور سردی کا احساس زیادہ ہو
    Ferm Phos+Mag.Phos +Nat. Phos 30
    627-جوڑوں کی یا اعصابی دردیں
    اگر جسم ٹھنڈاہو لیکن ماوف¿ جگہوں پر جلن کا احساس ہو تو
    Cimcifuga + Kali Carb 30
    628-گھٹنوں میں درد زیادہ چلنے
    پھرنے سے بڑھتا ہو
    Arnica + Bryonia 200
    تین دن تک روزانہ پھر ہفتہ میںایک دو بار
    629-رات کولیٹنے سے یا نمدارمرطوب
    آب و ہوا میں زیادہ ہوں تو
    1) Arnica+Rustox 200
    تین دن روزانہ ایک بار رات کو پھر ہفتہ وار اس کے علاوہ
    2) Mag.Phos+ Nat.Mure+Nat.Sulph 6X ترتیب و پیش کش :
    خالد محمود اعوان
    0332-2556942
    0308-2486085

اپنا تبصرہ بھیجیں